Iztirab

Iztirab

چاندنی رات میں اس پیکر سیماب کےساتھ

چاندنی رات میں اس پیکر سیماب کےساتھ
میں بھی اڑتا رہا اک لمحہ بے خواب کےساتھ
کس میں ہمت ہے کہ بدنام ہو سائے کی طرح
کون آوارہ پھرے جاگتے مہتاب کےساتھ
آج کچھ زخم نیا لہجہ بدل کر آئے
آج کچھ لوگ نئے مل گئے احباب کے ساتھ
سینکڑوں ابر اندھیرے کو بڑھائیں گے لیکن
چاند منسوب نہ ہو کرمک شب تاب کے ساتھ
دل کو محروم نہ کر عکس جنوں سے محسن
.کوئی ویرانہ بھی ہو قریہ شاداب کے ساتھ  

محسن نقوی

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *